ڈیمینشیا کوئی ایسا عارضہ نہیں جو بس ہر بوڑھے ہونے والے شخص کو لاحق ہوجائے۔ مختلف بیماریاں اسکی وجہ بنتی ہیں۔

ڈیمنشیا کیا ہے؟

ہمارا دماغ ہر اس چیز کو کنٹرول کرتا ہے جو ہم سوچتے، محسوس کرتے، یاد کرتے اور سرانجام دیتے ہیں۔

ایسی بیماریاں موجود ہیں جو انسان کے دماغ کو ٹھیک سے کام کرنے سے روکتی ہیں۔ جب کسی شخص کو ان میں سے کوئی بیماری ہوتی ہے، تو اسے سوچنے، یاد رکھنے اور بولنے میں مسائل ہو سکتے ہیں۔ وہ ایسی چیزیں کہہ سکتے ہیں یا کر سکتے ہیں جو دوسروں کو عجیب لگتی ہیں، اور انہیں روزمرہ کے کاموں کو کرنا مشکل لگتا ہے۔ ہوسکتا ہے کہ وہ اس شخص کی طرح نہ لگیں جو وہ پہلے تھے۔

جب یہ مسائل وقت کے ساتھ ساتھ بدتر ہوتے جاتے ہیں، تو ڈاکٹر ان کو بیان کرنے کے لیے ڈیمنشیا کا لفظ استعمال کر سکتے ہیں۔

ایسا نہیں کہ ڈیمنشیا ہر  ہر کسی کو عمر بڑھنے کے ساتھ ہی ہوتا ہے۔ یہ مختلف بیماریوں کی وجہ سے ہوتا ہے۔ یہ بیماریاں دماغ کے مختلف حصوں کو متاثر کرتی ہیں، اس لیے یہ لوگوں کو مختلف طریقوں سے متاثر کرسکتی  ہیں۔

ڈیمنشیا سے کون متاثر ہوتا ہے؟

ڈیمنشیا کسی کو بھی متاثر کر سکتا ہے۔

برطانیہ میں تقریباً 1,000,000 افراد ڈیمنشیا میں مبتلا ہیں۔

یوکے میں ڈیمینشیا مردوں سے زیادہ خواتین کو لاحق ہے۔

65 سال سے زیادہ عمر کے لوگوں کو ڈیمنشیا ہونے کا زیادہ امکان ہوتا ہے، لیکن یہ نوجوان لوگوں کو بھی متاثر کر سکتا ہے۔

ڈیمنشیا کسی کو کیسے متاثر کرتا ہے؟

ہم میں سے اکثر افراد چیزیں وقتاً فوقتاً بھول جاتے ہیں، جیسے کہ ہم نے اپنی چابیاں کہاں رکھی تھیں۔ اس کا مطلب یہ نہیں ہے کہ ہمیں ڈیمنشیا ہے۔ جب کسی کو ڈیمینشیا ہوتا ہے، تو علامات آہستہ آہستہ بدتر ہوتی جاتی ہیں، یہاں تک کہ  یہ روزمرہ کی زندگی کو مشکل بنادیتی ہے ۔

تاریخ یا دن کے وقت کے بارے میں پریقین نہ ہونا۔

Icons-ARUK-Fearless Orange_Calendar

حالیہ واقعات، نام اور چہروں کو بھول جانا۔

confusion for web

کھو جانا، زیادہ تر ان جگہوں پر جو نئی ہوں۔

Icons-ARUK-Cool Mandarin_Getting lost

مختصر وقت میں وہی سوالات متعدد بار پوچھنا۔

repeat icon AT

صحیح الفاظ استعمال کرنے یا دوسرے لوگوں کے الفاظ کو سمجھنے میں مشکل ہونا۔

Icons-ARUK-Occasional Teal_Chat

چیزوں کو غلط جگہ پر رکھنا۔

Icons-ARUK-Cool Mandarin_Magnifying glass

کسی شخص کے محسوس کرنے اور برتاؤ کرنے میں تبدیلی، جیسے اداس یا آسانی سے ہی پریشان ہو جانا، یا چیزوں میں دلچسپی کھو دینا۔

Icons-ARUK-Fearless Orange_Sadness

توجہ دینا یا آسان فیصلے کرنے میں مشکل محسوس کرنا۔

decisions icon AT

ایسا کیوں ہوتا ہے؟

ڈاکٹر اور سائنسدان ڈیمینشیا کے بارے میں مزید جاننے کے لیے بھرپور جستجو کر رہے ہیں بشمول اس کی وجوہات کے۔

 

کچھ لوگوں کو ڈیمنشیا ہونے کا امکان دوسروں کے مقابلے میں زیادہ ہو سکتا ہے، جیسے وہ لوگ جنہیں فالج ہوا ہو، یا جنہیں مندرجہ زیل عارضے لاحق ہوں:

ذیابیطس

بلند فشار خون

کولیسٹرول کی بلند سطح

ذہنی دباؤ

کیا کوئی علاج موجود ہے؟

اس وقت ایسی کوئی دوائیں نہیں ہیں جو ڈیمنشیا کا علاج کر سکیں۔

ایک بار جب کسی شخص کو ڈیمنشیا ہو جاتا ہے، تو وہ اسے تا حیات  رہے گا۔ بلکہ  ان کی حالت وقت کے ساتھ بدتر بھی ہوتی جائے گی۔

کچھ دوائیں ایسی ہیں جو روزمرہ کی زندگی کو قدرے آسان بنا کر تھوڑی عرصے کے لیے مدد کر سکتی ہیں۔ ایسی گروہی سرگرمیاں بھی ہو سکتی ہیں جن میں لوگ حصہ لے سکتے ہیں تاکہ وہ اپنی علامات کے ساتھ بہتر زندگی گزار سکیں۔ آپ آپ کا ڈاکٹر آپ کو اس بارے میں مزید معلومات فراہم کر سکتا ہے۔

کیا میں اپنے آپ کو ڈیمنشیا ہونے سے روک سکتا ہوں؟

کسی شخص کو بھی ڈیمنشیا ہونے سے روکنے کا کوئی یقینی طریقہ نہیں ہے، لیکن ایسی چیزیں ہیں جو ہم کر سکتے ہیں جن سے اس بات کا امکان کم ہو سکتا ہے کہہم ڈیمنشیا میں مبتلا ہوں ۔

کافی مقدار میں پھلوں اور سبزیوں سےبھر پور متوازن غذا کھائیں۔

apple icon AT

اپنے ڈاکٹر سے اپنے دل کی صحت کی جانچ کروائیں ، بشمولبلڈ پریشر اور کولیسٹرول، اور اگر وہ بہت زیادہ ہیں تو اس کے مشورے پر عمل کریں۔

Icons-ARUK-Occasional Teal_Heart_Heart

اپنے دماغ کا استعمال جاری رکھیں – سرگرمیوں یا سماجی گروہوں کے ذریعے جن سے آپ لطف اندوز ہوتے ہیں۔

Brain icon

اگر آپ کو ذیابیطس ہے تو اپنے ڈاکٹر کے مشورے پر عمل کریں۔

Blood drop

متحرک رہیں اور کوشش کریں کہ زیادہ وقت بیٹھ کر نہ گزاریں۔

running icon AT

تمباکو نوشی سےپرہیز کریں۔

No smoking-Cool Mandarin

فی ہفتہ شراب کے 14یونٹ سے کم پئیں۔

beer icon AT

اپنے وزن کو صحت مندانہ حد میں رکھیں۔

scale icon

مدد کے لیے کہاں جائیں

اگر آپ کو لگتا ہے کہ آپ کے کسی جاننے والے کو ڈیمنشیا ہو سکتا ہے، تو اسے اپنے ڈاکٹر سے رابطہ  کی ترغیب دیں۔ ڈاکٹر چیک کرے گا کہ ان کے مسائل کی وجہ کیا ہو سکتی ہے۔ بعض اوقات، اس شخص کو دوسرے ڈاکٹر کے پاس بھیجا جا سکتا ہے جو اسے بتا سکتا ہے کہ آیا اسے ڈیمنشیا ہے۔ اگر آپ کے رشتہ دار یا دوست کہیں، تو آپ ان کے ساتھ جا سکتے ہیں۔

اگر ڈاکٹر کوئی ایسی بات کہتا ہے جس کے بارے میں آپ کو یقین نہیں ہے، تو آپ ان سے وضاحت کے لیے کہہ سکتے ہیں۔

بعض دیگر مفید اداروں کی رابطہ تفصیلات یہ ہیں

Admiral Nurses ڈیمینشیا میں مبتلا افراد اور انکے گھر والوں کو عملی مشورے، معاونت اور تجاویز مہیا کرتے ہیں۔

0800 888 6678

Alzheimer's Society معلومات، مدد اور مقامی معاونتی گروپس تک رسائی فراہم کرتی ہے۔ ترجمے کی سہولت بھی دستیاب ہے۔

0333 150 3456

Alzheimer Scotland اسکاٹ لینڈ میں موجود افراد کو معاونتی خدمات، معلومات اور مشورے فراہم کرتی ہے۔

0808 808 3000

ہ کتابچہ نومبر 2022 میں اپ ڈیٹ کیا گیا تھا اور اس پر نظرثانی نومبر 2024 میں کی جائے گی

Infoline banner-Alternative (1)

Dementia Research Infoline

0300 111 5111
infoline@alzheimersresearchuk.org

ڈیمینشیا سے متعلق تحقیق اور شمولیت کے بارے میں سوالات؟
ہمیں پیر تا جمعہ صبح 9 سے شام 5 بجے تک کال کیجیے۔
کالیں راز میں رکھی جاتی ہیں اور ترجمے کی سہولت بھی دستیاب ہے۔